Tag Archives: Dr. Allah Nazar lecture

بلوچ مسئلہ اور عالمِ انسانیت کی ذمہ داریاں: ڈاکٹر اللہ نذر

ڈاکٹر اللہ نذر کا بلوچ سرمچاروں کو ایک لیکچر
مورخہ :26 اگست 2013
بلوچی سے ترجمہ : توکل بلوچ

Dr -  Allah Nazar Baloch

سرمچارو! آج ہم قومی غلامی کیخلاف آزادی کی جنگ لڑرہے ہیں یاکہ جس صورتحال سے ہم دوچار ہیں، یہ قوموں کی تاریخ میں انہونی بات نہیں ہے بلکہ جدید ریاست ہوں یا قدیم شہنشاہیت اور مطلق العنانیت کا دور ہو، ہر قوم اپنی سرزمین، قومی وجود اور اقتدار اعلیٰ کے تحفظ اور بقاء کیلئے اس طرح کے مراحل سے ضرور گزرا ہے اور تاریخ میں اس کی بے شمار مثالیں پیش کی جاسکتی ہیں۔ اس کیساتھ ہی عصرِقدیم سے ہوسِ قبضہ گیریت بھی رہا ہے کہ ایسے عزائم رکھنے والے سلطنت اپنی سرحدوں کی توسیع کیلئے انسانیت کے بڑے حصے کو تہہ تیغ کرتے رہے ہیں اور دوسرے اقوام کو تاراج کرکے مالِ غنیمت بٹورتے رہے ہیں۔

Continue reading

Leave a comment

Filed under News

ہر کوئی تاریخ کو جوابدہ ہے:‌ڈاکٹر اللہ نذر بلوچ

ترجمہ:‌توکل بلوچ
(“ہر کوئی تاریخ‌کا جوابدہ ہے” بلوچ قوم پرست ڈاکٹر اللہ نذر بلوچ کا مورخہ 14 اگست 2013 کو بلوچ سرمچاروں‌کو دیا گیا ایک لیکچر ہے جسے ہم قارئین کے دلچسپی کے پیش نذر شائع کررہے ہیں. ادارہ ڈیلی توار)

Dr -  Allah Nazar Balochآج کا دن نہ صرف دشمن بلکہ ہمارے لئے بھی خاصی اہمیت کا حامل ہے. ہمارے لئے اسلئے کہ اس دن کو دنیا میں‌ایک غیر فطری ریاست وجود میں‌آیا، کچھ ریاستیں‌فطری ہوتیں‌ہیں، فطری ریاستیں‌وہی ہوتی ہیں‌جو اپنی جغرافیہ اپنی زبان، اپنی تاریخ اور تہذیب و ثقافت کے حامل ہوتے ہیں اور انہی تاریخی ضروریات کے مطابق وجود میں‌آتے ہیں، کچھ ریاستیں‌ایسی بھی ہوتے ہیں کہ وہ عالمی طاقتوں‌کے مفادات کے تحفظ کے لئے انہی کے مدد تعاون یا سازشوں‌سے وجود میں‌آتے ہیں اور دیگر مظلوم قومیں‌بھی ان کی چیرہ دستیوں‌کے لپیٹ میں‌آتے ہیں.

Continue reading

Leave a comment

Filed under News

تنقید اور پروپگنڈہ – ڈاکٹر اللہ نذر

سرمچاروں سے ڈاکٹر اللہ نذر بلوچ کا ایک لیکچر بلوچی سے ترجمہ۔توکل بلوچ
مورخہ۔۲۷جولائی۲۰۱۳

تنقید کیا ہے؟

بنیادی طور پر تنقید کے دوا قسام ہیں۔
(۱)تنقید برائے تعمیر (۲)تنقید برائے تنقید

Dr-Allah Nazar Baloch(۱)تنقید برائے تعمیر وہ ہے جس میں تنظیم ،پارٹی یا ساتھی کی اصلاح کی جاتی ہے۔جہاں کہیں بھی کمزوری پائی جاتی ہو،خواہ وہ تنظیم کے یونٹ یا دمگ ہو یا کمانڈ ،سب کمانڈ ،ایریا کمانڈ یا سینڑل کمانڈ ہو اس میں نشاندہی کی جاتی ہے کہ ہم میں یہ کمزوری یا ضعف ہے نشاندہی کرنے والے ساتھی اپنے متعلقہ رہبر، اپنے سنگت اپنے کامریڈ کو بتاتا ہے کہ جی اگر پائے جانے والے کمزوریوں پر قابو نہیں پایا گیا تو ہمارے جدو جہد تنظیم یا پارٹی کو نقصان پہنچ سکتا ہے ۔تعمیری وہی ہے کہ جس میں جو اخلاص اور نیک نیتی شامل ہو۔ تنقید کنندہ خود شعور و آگاہی کے اعلیٰ وارفع منازل طے کریں تو اپنے ساتھیوں یا تنظیم پر جب شعور ،پختگی اور آگاہی کی بنیاد پر تنقید کرتا ہے تو اس سے تنظیم کی اصلا ح ہوتی ہے اور تنظیم بتدریج خرابی یا کمزوریوں سے پاک ہوتا ہے اور اپنے ممبراں کی بھی اصلاح کرتی ہے ۔ آگے چل کر اپنے پالیسوں پر مثبت انداز میں اصلاح کرتا ہے لیکن انداز یا طریقہ کار ایسا ہو کہ ساتھی اورہمراہوں کی دل آزاری نہ ہو۔
Continue reading

Leave a comment

Filed under News