ایک ڈاکٹر کا قتل – تحریر: حسن مجتبٰی


Dr Anwar Laghari
ڈاکٹر لغاری کون تھے؟ سندھ میں ‌کون سا ایسا شخص ہے جو انور لغاری  کے والد محمد علی لغاری اور والدہ فاطمہ لغاری کو نہئں‌ جانتا؟ ڈاکٹر انور لغاری کے دونوں ‌والدین اکثر سندھی سیاسی، ادبی، سماجی و صحافتی حلقوں ‌میں ‌وسیع پیمانے پر چاچا محمد علی لغاری اور چچی فاطمہ لغاری کے نام سے جانے جاتے ہیں. چاچا محمد علی لغاری بقید حیات ہیں‌اور انکی اہلیہ فاطمہ لغاری پانچ سال قبل فوت ہوگئیں. میں‌سوچ رہا ہوں سندھ کی یہ فاطمہ اگر زندہ ہوتیں‌ تو ان کے لئے اپنے بڑے اور جواں ‌سال بیٹے انور لغاری کا قتل کتنا روح ‌فرسا ہوتا. باپ کے لئے بھی ہے لیکن باپ اور ہم سب لوگ تو غالب کی اس سطر کی طرح ‌ہیں ‌مرنے سے پہلے آدمی غم سے نجات پائے کیوں. لیکن ماں تو اولاد کے غم میں ‌مرنے سے پہلے ہی مرجاتی ہے نا. وہ بیٹا جسکو تعلیم دلوانے کے لئے اس محنت کش اور غریب خاتوں نے کتنی مشقتیں‌اور مزدوریاں ‌کیں. سندھ کی اس غریب اور کسان عورت کا ایک ہی مقصد تھا کہ وہ اپنی اولاد (کہ اسکے دو ہی بیٹے تھے) کو اچھی سے اچھی تعلیم دلوائے.


ek-aur-doctor-ka-qatal-hassan-mujtaba

Leave a comment

Filed under Interviews and Articles

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s