Daily Archives: August 25, 2015

In Karachi, digging up and adding to the treasure of Balochi literature


Balochi Litrature

“Our areas are not simply places of gangs and violence. We have a glorious history and organise literary activities. But no one is showing it

Zia Ur Rehman

KARACHI: Amid the gang violence and the ongoing crackdown against criminal syndicates, many literary organisations are trying to revive the glorious past of Karachi’s Baloch-populated neighbourhoods in their contribution to Balochi poetry, fiction and culture.

Recently, the Nokaap Labzanki Majlis, a Baloch-literary organisation active in the Faqir Colony neighbourhood of Orangi Town, organised a gathering to launch a Balochi book titled “Rajdaptar-e-Falsafaen Sama”.

Continue reading

Leave a comment

Filed under News

Aug 26: Shaheed Kamisa Khan Marri and his unknown comrades

Leave a comment

August 25, 2015 · 3:00 pm

Aug 26: Tiger of Balochistan; Shaheed Nawab Akbar Khan Bugti

The dream of Shaheed Nawab Akbar Bugti lives on

Shaheed-e-Wattan


Leave a comment

Filed under Baloch Vanguards

اکّڑ ہو یا بکّڑ دونوں ایک

تحریر: میر محمد علی ٹالپر

ترجمہ: لطیف بلیدی

تحفظ کی رقم کے طور پر اضافی کمائی دراصل ’بھتہ خوری‘ کے بدصورت لفظ کیلئے محض ایک زیادہ قابل احترام نام ہے

Mir Muhammad Ali Talpurمورخہ 3 اگست کے سینیٹ اجلاس کے دوران پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے سینیٹر عثمان کاکڑ نے فرنٹیئر کور (ایف سی) اور ہرنائی میں کوئلے کی کانوں کے لیز مالکان کے درمیان دستخط ہونے والے ایک معاہدے اور موخر الذکر پر ایف سی کی طرف سے ٹیکس کے نفاذ کی ایک تحریک پر بحث شروع کی۔ انہوں نے ایف سی پر الزام لگایا کہ ”وہ حکومت بلوچستان کے معاملات میں بے جا مداخلت کرکے صوبائی خود مختاری میں دخل انداز ہورہی ہے“ اور انہوں نے مزید کہا کہ اگرچہ وزیر اعلیٰ ڈاکٹر عبدالمالک نے اس معاہدے کے ”غیر قانونی“ ہونے کا اعلان تو کیا تھا لیکن ایف سی اب بھی تحفظ کی رقم کے طور پر فی ٹن کوئلے پر 220 روپے وصول کررہی ہے۔ پیپلز پارٹی کے فرحت اللہ بابر نے کہا کہ ایف سی صوبائی حکومت کی ہدایات کی نافرمانی کر رہی ہے اور ”ماورائے آئین اقدامات“ اٹھا رہی ہے۔ انہوں نے ان ایف سی افسران کیخلاف کارروائی کا بھی مطالبہ کیا جنہیں عدالتوں میں لاپتہ افراد کے رشتہ داروں کی طرف سے نامزد کیا گیا تھا۔ داخلہ کے وزیر مملکت بلیغ الرحمان نے کہا کہ بلوچستان حکومت نے معاہدے کے بارے میں وفاقی حکومت سے کوئی باضابطہ شکایت نہیں کی ہے اور صوبائی محکمہ کانکنی کے حکام معاہدے پر دستخط کی تقریب میں موجود تھے۔

Continue reading

Leave a comment

Filed under Mir Mohammad Ali Talpur