بلوچستان کے لاپتہ افراد کے لواحقین کا پیدل قافلہ راولپنڈی میں داخل


راولپنڈی: بلوچستان کے لاپتہ افراد کے لواحقین کا 104 دن قبل کوئٹہ سے شروع ہونے والا پیدل قافلہ سندھ اور پنجاب کے مختلف شہروں سے ہوتا ہوا راولپنڈی کی حدود میں داخل ہو گیا ہے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق ماما عبدالقدیر بلوچ کی سربراہی میں بلوچستان کے لا پتہ افراد کے لواحقین کا قافلہ کوئٹہ اور کراچی سمیت سندھ اور پنجاب کے مختلف شہروں سے ہوتا ہوا روات کے ذریعے سے راولپنڈی کی حدود میں داخل ہوا جہاں سے یہ لانگ مارچ جی ٹی روڈ سے ہوتا ہوا مری روڈ اور پھر اسلام آباد میں داخل ہو گا اور پھر اقوام متحدہ کے آفس کے سامنے پہنچ کر اختتام پزیر ہو گا۔

vbmplongmarch-rawalpindi2

ماما عبدالقدیر بلوچ کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ میں لا پتہ افراد کے لواحقین کی رہائی کے لئے اقوام متحدہ کے دفتر کے سامنے اپنا احتجاج ریکارڈ کرائیں گے اور اپنے مؤقف سے پوری دنیا کو اگاہ کریں گے، اس حوالے سے اقوام متحدہ میں ایک قرار داد بھی پیش کی جائے گی، قرار داد میں اقوام متحدہ سے لا پتہ افراد کی رہائی کے لئے نیٹو فورسز کی مدد لینے کا مطالبہ بھی کیا جائے گا۔

خواتین، بچوں اور بوڑھوں کے ساتھ دیگر افراد پر مشتمل لا پتہ افراد کے لواحقین نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اور بینر اٹھا رکھے تھے جب کہ حکومت اور عدلیہ کے خلاف نعرے بازی کر رہے تھے۔ مظاہرین کا کہنا تھا کہ صوبائی اور وفاقی حکومتوں کے ساتھ ساتھ عدالتیں بھی ہمارے پیاروں کو رہا کرانے میں ناکام ہو چکی ہیں۔

واضح رہے کہ بلوچستان کے لا پتہ افراد کے لواحقین کا پیدل مارچ گزشتہ سال 27 اکتوبر کو کوئٹہ سے شروع ہوا تھا۔

[Express Tribune Urdu]

Leave a comment

Filed under News

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s