Daily Archives: April 17, 2013

American Think-tank Report Suggests a “Permanent U.N. Observation Mission” in Balochistan

Frederic GrareWASHINGTON, DC: A report on Balochistan published and issued on Thursday by a leading American think-tank has recommended the formation of a permanent United Nations observation mission in Balochistan “to monitor the human rights situation” in the province.

The report Balochistan: The State Versus the Nation has been written by Dr., Director and Senior Associate of the South Asia Program at the Carnegie Endowment for International Peace. Dr. Grare, a French scholar, had previously written the widely quoted Pakistan: the Resurgence of Baluch nationalism.

Continue reading

Leave a comment

Filed under News

Why “Daily Tawar” is singled out For Persecution?

tawarThe difficulties that the Daily Tawar faced right from the beginning are still persisting but now their intensity has increased to extreme. It was only Journalists who reported and presented the real picture of the society and the death and destruction of the world’s horrific big wars. In its journalistic responsibilities, Daily Tawar has always strived to adhere to the principles of real journalism in the war of justice and unfairness.

Continue reading

Leave a comment

Filed under News

درویش اور فریبکار تبصرہ : میر محمد علی ٹالپر ترجمہ: لطیف بلیدی

منتخب ہونے کے جنون کے پیچھے یقینا ایک محرک تو موجودہے؛ مالی فوائد اور اثرو نفوذ کے حوالے سے وہاں بہت کچھ داو پر لگا ہوا ہے

Mir Mohammad Ali Talpur

نگران وزیر اعظم جسٹس (ر) ہزار خان کھوسہ کو مبینہ طور پر ’ناراض بلوچ رہنماوں‘ کو عام انتخابات میں حصہ لینے کیلئے قائل کرنے کی خاطر بلوچستان کے دورے پر جانا تھا۔ یہ نگراں، اپنے پیشرووں کی طرح، ایک غیر حقیقی سعیءلاحاصل میں مبتلا ہیں۔ اس سعیءلاحاصل پر مجھے شیخ سعدی کی ایک تمثیل یاد آرہی ہے۔ ایک بادشاہ کو اپنے دائرہءاقتدار میں رہنے والے بہت سے درویشوں (سادھو، سننیاسیوں) کی فلاح و بہبود کے بارے میں تشویش لاحق ہوتی ہے، اپنے وزیر کو کچھ پیسے دیتا ہے کہ انکے درمیان تقسیم کردے۔ کچھ دنوں کے بعد وزیر غیر استعمال شدہ رقم کیساتھ واپس آیا اور کہا کہ اسے کوئی درویش نہیں مل سکا۔ برہم بادشاہ نے کہا کہ وہاں تو بہت سارے ہوا کرتے تھے۔ وزیر نے پر سکون انداز میں وضاحت کی، ”اے بادشاہ، اصلی درویش پیسے کو نہیں چھوتے اور وہ جو اسے چاہتے ہیں وہ درویش نہیں بلکہ فریبکار ہیں اسلئے میں نے انہیں نہیں دیے۔ وہ لوگ جو انتخابات کی مخالفت کررہے ہیں وزیراعظم سے نہیں ملیں گے اور وہ لوگ جو پہلے ہی سے دل کی گہرائیوں سے ملوث ہیں اور جنہیں اس بات پر قائل کرنے کی ضرورت ہی نہیں، ان سے ملنے کیلئے ایک دوسرے کو روند رہے ہیں۔ درویشوں کی تلاش میں نگراں وزیر کی کوئٹہ یاترا بیکار جائے گی۔ وہ جو حقیقتاً اہمیت رکھتے ہیں کوئٹہ میں نہیں ہیں، جبکہ وہ جو بات کررہے ہیں پہلے ہی سے تابعداری میں پیچھے کی طرف جھک رہے ہیں اور یقینا یہ فریبکار بلوچستان کے مسائل کا حل نہیں ہیں۔

Continue reading

Leave a comment

Filed under Mir Mohammad Ali Talpur, Write-up